ایف ٹی آئی کنسلٹنگ انکارپوریٹڈ’ایف ٹی آئی کنسلٹنگ (ٹی ایم)’ کے ماتحت برانڈ اسٹریٹجی کو مستحکم کرے گی

AsiaNet 42773

ویسٹ پام بیچ، فلوریڈا، 5 جنوری 2011ء / پی آر نیوز وائر – ایشیا نیٹ /

“ون   برانڈ” اسٹریٹجی”ایک مستحکم ” فلسفے کو تقویت ، نئی مارکیٹ میں رسائی کو وسعت دے گی اور مارکیٹ پر اثرات میں اضافہ کرے گی

اداروں کے تحفظ اور ان کے کاروباری اقدام کو بہتر بنانے  میں مدد کے لیے وقف عالمی کاروباری مشاورتی ادارے ایف ٹی آئی کنسلٹنگ  (NYSE: FCN)نے آج اعلان کیا ہے کہ وہ اپنے کارپوریٹ مقام اور دنیا بھر میں اپنے صارفین کو ہموار اسٹرٹیجک خدمات فراہم کرنے کی صلاحت میں مدد کے لیے اپنے تمام حاصل شدہ اداروں کو ایف ٹی آئی کنسلٹنگ برانڈ میں منتقل کررہی ہے۔ یہ عمل 2011ء کے ماہ نومبر تک مکمل ہوجانے کی توقع ہے۔

صدر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر جیک ڈن نے کہا کہ “آج 26 ممالک میں 3,600 ملازمین پر مشتمل ایف ٹی آئی کنسلٹنگ ایک مشترکہ مقصد کے لیے متحد ہیں: بحران کے وقت اپنے صارفین کو تنقیدی سوچ فراہم کرنا جو ان اداروں کی کاروباری قدر متاثر کرنے والے چیلنجز  کا سامنا کرنے میں فرق پیدا کرتی ہے۔

“ہم یقین رکھتے ہیں کہ ون برانڈ ہماری فرم کے مقصد کو زیادہ بہتر انداز میں پیش کرسکتا ہے اور ہمارے ماہرین کی مختلف مہارتوں اور تجربوں کے حامل صارفین کو مکمل سلوشنز کی فراہمی کی صلاحیتوں میں اضافہ کرے گا چاہے وہ مقامی سطح پر ہوں یا بین الاقوامی سطح پر۔ ہم یہ بھی یقین رکھتے ہیں کہ ون برانڈ اسٹریٹجی ہمارے برانڈ شناخت کو بہتر بنائے گی خصوصا ان مارکیٹوں میں جو ہمارے لیے نئی ہیں اور جہاں صارفین کی فیصلہ سازی میں برانڈ کی اہمیت میں اضافہ ہورہا ہے۔

“گزشتہ پانچ سالوں کے دوران ہم نے 25 سے زائد اداروں کو حاصل کیا جن میں سے اکثر اپنی مارکیٹس میں نمایاں پہچان رکھنے والے اور پائیدار ہیں۔ ہماری ون برانڈ اسٹریٹجی ان کاروباروں میں کئی سالوں کے غور و فکر کے بعد انضمام سے حاصل ہونے والے عروج کو ظاہر کرتی ہے۔”

ہماری ون برانڈ اسٹریٹجی کے نتیجے میں ادارے نے 2010ء کی چوتھی سہ ماہی میں تقریباً 25 ملین ڈالر یا 0.36 فی ڈایلوٹڈ حصص کا غیر نقدی حصول ریکارڈ کیا جو مخصوص حاصل شدہ اداروں کے تجارتی ناموں کی منسوخی اور سبکدوشی کا مظہر ہے۔ ماضی کی عمل درآمدگیوں کی طرح ادارہ اسے ایک خاص ذمہ واری کی طرح برتاؤ کرے گا۔ اس کے نتیجہ میں یہ ایک نان-گاپ پیمائش مرتب شدہ آمدنی فی ڈائلیوٹڈ حصص (“ایڈجسٹڈ ای پی ایس”) کے حسابات میں شامل نہیں ہوگا اور ادارے کی سابقہ 2010ء رہنمائی پر اثر انداز نہیں ہوگا۔ 2011ء میں “ون برانڈ” اسٹریٹجی کی تعمیل میں ادارہ کو مارکیٹ کے اضافی اخراجات برداشت کرنے کی توقع ہے جو ادارے کی مکمل نتائج کے لیے ضروری نہیں سمجھے جاتے۔

ایف ٹی آئی کنسلٹنگ کے بارے  میں

ایف ٹی آئی کنسلٹنگ ایک عالمی کاروباری مشاورتی ادارہ ہے جو بڑھتی ہوئی پیچیدہ قانونی اور اقتصادی ماحول میں اداروں کے تحفظ اور کاروباری قدر کو بہتر بنانے میں مدد کے لیے وقف ہے۔ دنیا میں بڑے کاروباری سینٹرز میں 3,600 سے زائد ملازمین کے ساتھ ہم صارفین کے ہمراہ تحقیق، مقدمہ سازی،انضمام  اور حصول دستیابی، ریگولیٹری معاملات، ساکھ کے انتظام اور ری اسٹرکچرنگ جیسے شعبوں میں پیش قدمی، ممتاز کرنے اور پیچیدہ کاروباری چیلنجز سر کرنے کے لیے روزانہ کام کرتے ہیں۔ مزید معلومات http://www.fticonsulting.com سے حاصل کی جاسکتی ہیں۔

غیر – جی اے اے پی پیمائش کا استعمال

نوٹ: ہم مرتب شدہ آمدنی فی ڈائلیوٹڈ حصص (“ایڈجسٹڈ ای پی ایس”) کو خصوصی چارجز کے فی حصص تاثیر سے منہا آمدنی فی ڈائلیوٹڈ حصص اور قرضہ ختم کرنے والی لاگت جو کہ اس وقت برداشت کی گئی کے معنی میں بیان کرتے ہیں۔ اگرچہ ایڈجسٹڈ ای پی ایس اقتصادی صورتحال کی پیمائش یا عمومی تسلیم شدہ اکاؤنٹنگ اصولوں (“جی اے اے پی”) کے ساتھ مطابقت میں کارکردگی کا تعین نہیں لیکن ہمیں یقین ہے کہ یہ پیمائش ہماری کاروائیوں کے نتائج جانچنے میں ایک مفید کام ہوسکتا ہے جیسے ایک وقت سے دوسرے وقت کو موازنہ کرنے یا ہمارے حریفوں مقابلے کے۔

ایڈجسٹڈ ای پی ایس تمام اداروں کی جانب سے اسی انداز سے بیان نہیں کیا جاتا اور اس کا دوسرے اداروں کے اسی طرح کے دیگر ناموں والی پیمائش سے موازنہ نہیں کیا جاسکتا تاوقتیکہ اس کی تعریف ویسی ہی ہو۔ یہ نان گاپ پیمائش ہمارے آمدنی کے بیان میں کوئی متبادل یا برتری کے بجائے معلومات میں اضافہ سمجھی جائیں گی ۔

سیف ہاربر بیان

یہ اعلامیہ وفاقی ضمانت قانون کے معنی میں “مستقبل کے حوالے سے بیانات” پر مشتمل ہو سکتا ہے بشمول متوقع مفاد اور “ون برانڈ” اسٹریٹجی کی تعمیل کی لاگت کے متعلق بیانات۔ آپ کو مستقبل کے حوالے سے بیانات پر بھروسا کرنے اور تعبیر کرنے میں احتیاط کرنی چاہیے کیوں کہ اس میں معلوم اور نا معلوم خطرات، شکوک اور دیگر امور شامل ہیں جو کہ کچھ معاملات میں ادارے کے اختیار سے باہر ہیں۔ چند خطرات اور شکوک میں شامل ہیں، لیکن محدود نہیں، آیا کہ ادارہ “ون برانڈ” اسٹریٹجی کے متوقع اقصادی اور عملیاتی مفاد، اس اسٹریٹجی پر عمل درآمدگی میں ہونے والے اضافی اخراجات اور سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن کے ساتھ ادارے کی فائلنگ میں درج دیگر امور کے بارے میں ادراک کرے گا۔ ہم مستقبل کے حوالے سے بیانات میں سے کسی کو حقیقی نتائج اور ایونٹ کے مطابق اپڈیٹ کرنے کے ذمہ دار نہیں ہےاور نہ ہی  ایسا کوئی منصوبہ ہے۔

ذریعہ: ایف ٹی آئی کنسلٹنگ

رابطہ: جیک ڈن، صدر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر، ایف ٹی آئی کنسلٹنگ، +1-561-515-1900؛

سرمایہ کار: گورڈن میک کاؤن، +1-212-850-5600 یا میڈیا: انڈے ماس، +1-212-651-7133